Progress Fund 14

موجودہ حکومت نے تعمیراتی شعبے میں تاریخی پیکج دیا ہے

اسلام آباد ۔ (نیوز ایجنسی) موجودہ حکومت نے تعمیراتی شعبے میں تاریخی پیکج دیا ہے جس سے نہ صرف کم آمدنی والے افراد اپنا گھر بنانے کا خواب پورا کرنے میں مدد ملے گی بلکہ ملک میں تعمیرات اور اس سے جڑی صنعتوں کے فروغ سے معیشت کا پہیہ بھی چلے گا اور لاکھوں افراد کےلئے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

وزیراعظم آفس کی طرف سے سوشل میڈیا پر جاری پیغام کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی طرف سے اعلان کردہ تاریخی تعمیراتی پیکج کا مقصد کم آمدن والے افراد کےلئے چھت کا حصول آسان تر بنانا ہے ۔ اس غرض سے پانچ مرلہ کے مکان پر محض پانچ فیصد مارک اپ ، دس مرلہ کے مکان پر محض سات فیصد مارک اپ لیا جائے گا۔

جبکہ بینکوں کی جانب سے 330 ارب روپے تعمیراتی شعبے کےلئے مختص کئے گئے ہیں ۔تعمیراتی پیکج سے نہ صرف عام آدمی کو گھر بنانے میں سہولت حاصل ہوگی بلکہ ملک میں کئی صنعتوں کا پہیہ بھی چلے گا جس سے روزگار کے بے شمار مواقع پیدا ہوں گے۔ دیہاڑی دار مزدور طبقہ کی بڑی تعداد ایسی ہے جس کا انحصار تعمیراتی شعبے سے وابستہ ہے۔

کورونا وبا کے باعث سب سے زیادہ متاثر ہونے والا طبقہ یہی ہے ۔ حکومت کی طرف سے تعمیراتی شعبے کو کھولنے کا فیصلہ مزدور طبقے کےلئے بہت بڑا ریلیف ہے۔ حکومت کی طرف سے تعمیراتی شعبے کو ریلیف پیکج ملنے سے ملک میں کوویڈ 19 کے دوران بھی تعمیرات کا شعبہ کام کررہا ہے جس سے اس شعبے سے جڑی چالیس مزید صنعتیں بھی مستفید ہو رہی ہیں۔

تعمیراتی صنعت کے فروغ کےلئے حکومت نے فکس ٹیکس کی سہولت دی ۔ نیا پاکستان ہاﺅسنگ سکیم کے تحت منصوبوں پر 90 فیصد فکس ٹیکس معاف کیا۔ جی ایس ٹی میں کمی کی اور سریہ اور سیمنٹ کے علاوہ تعمیراتی سامان پر ود ہولڈنگ ٹیکس کی چھوٹ دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں