PM Imran Khan Islamic 24

وزیرِاعظم عمران خان کی زیر صدارت نالج اکانومی کے فروغ، سیرت النبی پر تحقیقی سنٹر کے قیام اور اعلیٰ تعلیم کے مختلف مجوزہ منصوبوں کی پیشرفت بارے جائزہ اجلاس

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیرِاعظم عمران خان کی زیر صدارت نالج اکانومی کے فروغ، سیرت النبی پر تحقیقی سنٹر کے قیام اور اعلیٰ تعلیم کے حوالہ سے مختلف مجوزہ منصوبوں کی پیشرفت کے حوالہ سے جائزہ اجلاس ہوا۔

اجلاس میں وزیرِ تعلیم شفقت محمود، ڈاکٹر عطاءالرحمن (بذریعہ ویڈیو لنک)، پروفیسر شعیب خان اور راشد خان نے شرکت کی۔ وزیراعظم آفس کے میڈیا ونگ کے مطابق اجلاس میں ہری پور ہزارہ میں پاک آسٹرئین فاخوشولے (Pak-Austrian Fachhochschule) کے قیام، سیرت النبی سنٹر، انڈسٹری اور یونیورسٹیوں میں بہتر کوآرڈینیشن کے لئے ریسرچ سنٹر کے قیام ، تعلیم کے فروغ کے لئے انٹرنیٹ کی آسان رسائی اور انفارمیشن ٹیکنالوجی سے متعلقہ امور کے حوالہ سے معاملات کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔

وزیرِاعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ سیرت النبی سنٹر کو جلد از جلد مکمل کرکے فعال بنایا جائے تاکہ سیرت النبی کے حوالہ سے تحقیقی سرگرمیوں کا آغاز کیا جا سکے۔ اعلیٰ تعلیم خصوصاً نالج اکانومی، مصنوعی ذہانت اور انڈسٹری و یونیورسٹیوں میں بہتر کوآرڈینیشن کے حوالہ سے ریسرچ سنٹر کے قیام سے متعلق منصوبوں پر بات کرتے ہوئے وزیرِاعظم نے کہا کہ جدید تعلیم کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبہ میں پاکستان کے نوجوانوں میں بے شمار صلاحیت موجود ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ اس صلاحیت کے فروغ کے لئے موافق ماحول فراہم کیا جائے۔

وزیرِاعظم نے کہا کہ انٹرنیٹ کی آسان اور ملک بھر میں رسائی خصوصاً طالبعلموں تک فراہمی کو یقینی بنانے اور اس حوالے سے درپیش مسائل کے ترجیحی بنیادوں پر حل کے لئے لائحہ عمل تشکیل دیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں