تعلیمآج کا اخبار

فیل ہونے والے طلبہ کو رعایتی نمبروں سے پاس کرنے کا فیصلہ کیا:وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود

اسلام آباد : وفاقی وزیربرائے تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت شفقت محمود نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے یہ سال انتہائی مشکل تھا ، تمام صوبوں کی مشاورت سے مشکل فیصلے کرنے پڑے، فیل ہونے والے طلبا کو بھی رعایتی 33 نمبر دے کر پاس کرنے کافیصلہ کیا گیا۔

آج وفاقی تعلیمی بورڈ میں انٹرمیڈیٹ پارٹ ٹو کے نتائج کے اعلان کے موقع پر میں پوزیشن ہولڈرز کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پوزیشن ہولڈرز اور ان کے والدین کو مبارکباد پیش کرتا ہوں، یہ سال کورونا کی وجہ سے بہت مشکل تھا ، کورونا کی وجہ سے تقریباً 4 یا 5 ماہ ہی تعلیمی ادارے کھل سکے، بچوں کو کورس مکمل کرنے میں مشکلات رہیں لیکن ہم نے مشکل فیصلے کئے۔

انہوں نے کہا کہ پہلا فیصلہ کیا کہ امتحان ضرور لینا ہے، پوزیشن لینے والے بچوں کو کوئی مشکلات نہیں ہوئی ہوں گی۔ان کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر امتحانات کے حوالے سے گمراہ پروپیگنڈے کی وجہ سےطلبہ کو بہت مشکلات کا سامنا رہا، ان کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے سلیبس بھی کم کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ فیل ہونے والے طلبا کو کم از کم 33 فیصد نمبر دے کر پاس کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ وفاقی وزیر تعلیم نے کہا کہ آن لائن سہولیات سب کو میسر نہیں تھیں، 30 بورڈز اور صوبائی حکومتوں کے ساتھ مشورے کرکے فیصلے کئے۔

Artigos relacionados

Deixe um comentário

O seu endereço de e-mail não será publicado. Campos obrigatórios são marcados com *

Botão Voltar ao topo