Urdu News Agency 23

موٹر وے پر کار میں لڑکی سے مبینہ اجتماعی زیادتی

گوجرہ : ملتان فیصل آباد موٹر وے (ایم 4) پر ایک لڑکی کو مبینہ طور پر کار میں اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق گوجرہ تھانہ سٹی میں 18 سالہ لڑکی کو بوتیک پر نوکری کا جھانسہ دے کر بلانے کے بعد اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کی ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔

شاہین اختر نامی خاتون کی مدعیت میں درج کرائی گئی ایف آئی آر میں حماد، رحمان اور لائبہ نامی 3 ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے، ایف آئی آر کے مطابق اس کی 18 سالہ بھانجی کو موبائل فون پر میسیج آیا کہ ایک بوتیک میں نوکری کے لیے اسے گوجرہ آنا ہوگا، جہاں اس کا انٹرویو لیا جائے گا۔ وہ بتائی گئی جگہ پر پہنچے تو لائبہ نامی عورت نے انہیں کہا کہ وہ لڑکی کو ہمارے ساتھ گاڑی پر بھیج دے، انٹرویو کے بعد وہ واپس اسے چھوڑ دیں گے۔ تینوں افراد لڑکی کو بذریعہ موٹر وے فیصل آباد لے گئے، راستے میں گاڑی میں ہی سوار 2 افراد نے لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنایا، بعد ازاں ملزمان لڑکی کو گوجرہ انٹر چینج پر چھوڑ کر فرار ہوگئے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کروا لیا گیا ہے جب کہ ڈی این اے کے نمونے بھی لے لئے گئے ہیں، زیادتی کے مقدمے میں ملوث ایک ملزم گرفتار کرلیا گیا ہے جب کہ دوسرے ملزم کی گرفتاری کےلئے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے لڑکی سے مبینہ اجتماعی زیادتی کے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو جلد از جلد ملزمان کی گرفتاری کا حکم دے دیا ہے۔

Gojra: A girl has been allegedly gang-raped in a car on Multan-Faisalabad Motorway (M4). An FIR has been registered against the victim.

In the FIR registered in the complaint filed by a woman named Shaheen Akhtar, 3 accused named Hamad, Rehman and Laiba have been named. So he has to come to Gojra, where he will be interviewed. When they reached the place, a woman named Laiba told them to send the girl with us in the car, after the interview they would release her back. The three persons took the girl to Faisalabad by motorway. On the way, two persons in a car raped the girl. Later, the accused left the girl at Gojra Interchange and fled.

Police said that the victim girl has been given medical treatment while DNA samples have also been taken. One accused involved in the rape case has been arrested while raids are underway to arrest the other accused. Punjab Chief Minister Usman Bazdar has taken notice of the incident of alleged gang rape of a girl and directed the concerned authorities to arrest the accused as soon as possible.





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں