transporters 18

میرپور ٹرانسپوٹرز رکشہ ڈرائیوروں کی من مانیاں کرایوں میں خود ساختہ اضافہ عوام سراپا احتجاج

میرپور(ویب ڈیسک) پٹرول کی قلت ختم ہونے کے باوجود بھی رکشہ ڈرائیور اور ٹرانسپورٹرز نے کرایوں میں میں کمی نہ کی ،سواریوں کے ساتھ لڑئی جھگڑے معمول بن گئے۔

اگر ہم اندرون شہرمیں  چلنے والے رکشہ ڈرائیورز کی بات کریں تو وہ بھی  فی سٹاپ کا کرایہ 10 کی بجائے 30 روپے وصول کرنے لگے ہیں  چیک اینڈ بیلنس کرنے والے ٹرانسپورٹ اتھارٹی ناکام مسافروں اور پبلک ٹرانسپورٹ ڈرائیوروں میں لڑائی جھگڑا و تکرار معمول بن گئی منہ زور ڈرائیورز اور کنڈکٹرز خواتین مسافروں کی بھی تذلیل کرنے لگے

یہ بھی واضح رہے کہ پٹرول کی قلت کی وجہ سے ٹرانسپورٹرز اور رکشہ ڈرائیورز نے خود ساختہ کرایوں میں اضافہ کی تھا لیکن اب پٹرول کی قلت ختم ہونے کے باجود بھی کرایوں میں کمی نہیں کررہے ، ٹرانسپورٹرز کا کہناہے کہ پٹرول کی قلت ختم ہوئی ہے مہنگائی تو مسلسل زیادہ سے زیادہ ہورہی ہے ہم کیا کریں؟

مسافروں کا احتجاج احکام سے نوٹس لینے کامطالبہ ، تفصیلات کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی کمی ختم ہونے کے باجود بھی رکشہ ڈرائیورز اور پبلک ٹرانسپورٹ مالکان نے کرایوں میں کمی نہ کی اور خود ساختہ ریٹ مقرر کرتے ہوئے کرائے وصول کرنے لگے

جبکہ زائد کرایوں کے بارے میں سوال کرنے پر ڈرائیورز کی مسافروں سے تکرار معمول بن گئی ، مسافروں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ٹرانسپورٹ اتھارٹی پبلک ٹرانسپورٹ کی لوٹ مار کا نوٹس لے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں