Kotli: Noise of 9 year old girl 50

کوٹلی: 9سالہ بچی کا شور، بچاو بچاو یہ میری ماں نہیں ہے

کوٹلی (محمد سلیم چوہدری)آج کوٹلی میں پیش آنے والا دلخراش واقعہ 9سالہ بچی نے اچانک شور مچا دیا بچاو بچاو یہ میری ماں نہیں ہے اور وہ عورت جو۔
اللہ معاف کرے زبردستی بچی کو ساتھ لے جارہی تھی کہ میری بیٹی ہے

مجھےبچاؤ وہاں موجود لوگوں نے کوشش کی لیکن عورت گالم گلوچ کر رہی تھی عورت نے کہا کہ یہ بچی میری ہے لیکن بچی بار بار یہ کہہ رہی تھی کہ یہ میری ماں نہیں ہے شہریوں نے جمع ہو کر بچی کو بچایا اور پولیس بھی موقع پر پہنچ آئی ، بچی اور عورت کو اپنےساتھ سٹی تھانہ کوٹلی میں لے گئی،۔

کیا یہ بچی اسی عورت کی تھی یا نہیں عینی شاہدین سے بات ہوئی تو انہوں نے کہا بچی کہتی رھی کہ میری ماں فوت ہو گئی ہے میرا والد کہیں کام گیا ہے لیکن یہ میری ماں نہیں ہے یہ غلط کاری کے لئے مجھے لیکر جا رہی ہے۔

ذرائع کے مطابق بچی کو دوبارہ اس عورت جس کا ریکارڈ بھی ٹھیک نہیں ہے اسکے حوالے کر دیا گیا ہےسوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا پولیس نے تصدیق کی کہ۔بچی واقع اسی عورت کی ہے؟

کیا بچی اپنی خوشی سے واپس گئی ہے؟

بچی کو ایسی کونسی ذہنی یا جسمانی اذیت دی گئی جسکی وجہ سے بچی نے سرعام بھرے بازار میں شور مچایا اور مدد طلب کی؟
ماں ہو یا باپ ہو باپ ہو بیٹا ہو چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ کے تحت بچی کو تخفظ فراہم کرنا اداروں کی ذمہ نہیں ہے کیا؟

ایس ایس پی کوٹلی فوری نوٹس لیں اور اس معاملے کی اصل تحقیات کر کے بچی کو تخفظ فراہم کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں