آزاد کشمیراہم خبریں

ڈاکٹروں پر پولیس تشدد شرمناک ہے: خواجہ فاروق

ینگ ڈاکٹرز کے مطالبات جائز ہیں حکومت پورے کرے، سابق وزیر

مظفرآباد(ویب ڈیسک) تحریک انصاف پاکستان کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری خواجہ فاروق احمد نے پریس کلب سنٹرل بار، تاجروں پر پولیس یلغار کے بعد اب ڈاکٹروں پر حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اگر پریس کلب مظفرآباد ،سنٹرل بار، روم اور تاجروں پر حملے کے ذمہ داران کے خلاف کاروائی کی گئی ہوتی

تو آج حکومت اس کی انتظامیہ کو پر امن اپنے جائز حقوق کے لیے ہڑتال پر بیٹھے ہمارے معاشرے کے کریم ڈاکٹرز کے احتجاجی کیمپ پر حملے ،ڈاکٹرز کو گرفتارکرنے زخمی کرنے کی ہمت نہ ہوتی۔ موجودہ حکومت آزاد کشمیر اپنے جعلی اقتدار کے آخری سال ظلم و بربریت کے ریکارڈ قائم کررہی ہے۔ خواجہ فاروق احمد نے کہا یہ ینگ ڈاکٹرز کے مطالبات بالکل جائز اور درست ہیں۔

حکومت کو چاہئے تھا کہ وہ ہڑتال شروع ہوتے ہی سنجیدہ مذاکرات کرتی تو کوءی وجہ نہ تھی کہ ڈاکٹرز حکومت کو کچھ عرصہ مہلت دے دیتے لیکن یہ پالیسی کہ ڈاکٹرز خود ہی تھک جائیں گے، انتہائی غلط پالیسی تھی۔

نئے بجٹ میں بھی حکومت نے اس اہم ترین شعبہ کے لیے کوئی فنڈز نہ رکھےہیں۔ مظفرآبادکے ہسپتالوں میں کوءی سی ٹی سکین مشین ورکنگ حالت میں نہیں ہے ۔ لیکن لاچار بیماروں کو آکسیجن سلنڈر سمیت اسپتال سے سڑکیں کراس کرواکر پرائیویٹ سی ٹی سکین کے لئے ریفر کردیاجاتاہے۔

Artigos relacionados

Deixe um comentário

O seu endereço de e-mail não será publicado. Campos obrigatórios são marcados com *

Botão Voltar ao topo