The secret intentions of nuclearism 55

نیوکلیوونیئلزم کے خفیہ عزائم

ٹائٹل: بیدار ھونے تک
کالمکار: جاوید صدیقی

میرپورخاص شہر سے تعلق رکھنے والی علمی تعلیمی اور محقق شخصیت افتخار احمد سے گاہے بگاہےپاکستان سمیت دنیا بھر میں اسلام اور پاکستان مخالف قوتوں اور خفیہ سازشوں کو بے نقاب کرنے اسلام اورپاکستان کی سلامتی و بقاء کیلئے میں صیہونی یہودی کارفرمائیوں پر شاہین اور باز پرندے کی طرح نظر رکھتے ھوئے اپنی اپنی تحقیقی تناظر میں معلومات کی تصدیق اور شیئرنگ کرکے ملک و قوم کیلئے ہمہ تن وقت تیار رہتے ہیں مانا کہ ہم کوئی باقائدہ سپاہی تو نہیں مگر اپنے قلم کو وطن کی سلامتی و بقاء اور قوم کے اتحاد کیلئے ہر وقت حروف کا استعمال رکھتے ہیں خاص طور پر سہولتکاروں ضمیر اور وطن فروشوں کے خلاف کھل کر قلم کا جہاد کرتے ہیں اپنی نظریں پاکستانی شاہین کی طرح دشمنانان پاکستان پر گاڑھے ھوئے ہیں اور اس کیساتھ ساتھ اپنے وطن عزیز پاکستان کے گمنام سپاہیوں کی کاوشوں اور لازوال قربانیوں کو بے پناہ سراہتے ہیں۔ ھم تمام پاکستانیوں پر قومی اخلاقی اور دینی فرائض میں شامل ھے کہ ہم اپنی فوج کے شانہ بشانہ چلیں۔۔۔۔

معزز قارئین نیوکلیوونیئلزم کے موضوع پر آپ کو بتاتا چلوں کہ امریکہ میں نیوکوائنس, انڈیا میں نیو کون فرنٹیئر اور سعودی عرب میں نیو ایم کے مشن سے یہودی زینسٹ خفیہ کاروائیوں میں متحرک ہیں۔ نیو قدامت پسند عام طور پر بین الاقوامی امور میں جمہوریت کے فروغ اور مداخلت پسندی کے حامی ہیں، جن میں طاقت (فوجی قوت کے ذریعہ) جس میں امن بھی شامل ہے اور یہ اشتراکی اور سیاسی بنیاد پرستی کو نظر انداز کرنے کیلئے مشہور ہے۔ یہ نیو کیا بلا ھے آخر ؟؟ لفظ نیو کے معنی نئی ابتداء عالمی آخری محافظ اور بلآخر تبدیلی لانے والے مسیحا کے ہیں۔ سنہ دو ہزار عیسوی کے بعد اسے پہلی بار فلمی میڈیا سے تشہیر دی گئی۔ امریکی فلم میٹرکس کےہیرو کینوریوز کو نام نیو دیا گیا کیونکہ اسکی تعریف کے مطابق اسے کردار ادا کرنا تھا پھر کچھ امریکی پارلیمانی ارکان کے ایک مخصوص گروپ کو نیو کوائنس کا نام دیا گیا جنکا مقصد اسرائیل کیلئے عربوں کو تباہ کرنا اور ایک عالمی اسرائیلی یہودی حکمرانی کے قیام کا آغازکرنا تھا۔

نیولوکونیئلزم،براہ راست فوجی کنٹرول یا بالواسطہ سیاسی کنٹرول کے سابقہ ​​نو آبادیاتی طریقوں کے بجائے کسی ملک کو متاثر کرنے کیلئے معاشیات، عالمگیریت، ثقافتی سامراج اور مشروط امداد کو استعمال کرنے کے رواج کا نام ہے۔ نیوکلیوونیئلزم کو بڑے پیمانے پر سرمایہ داری کی ایک مزید نشوونما کےطور پر سمجھا جاتا ہے جو سرمایہ دارانہ طاقتوں کو براہ راست حکمرانی کے بجائے بین الاقوامی سرمایہ داری کے عمل کے ذریعہ تابع قوموں پر غلبہ حاصل کرنے کے قابل بناتا ہے۔ ویکیپیڈیا کیمطابق درحقیقت نیو ایک آئیڈیل صیہونی لیجنڈ کا نام ہے جو اپنی صلاحیتوں اور طاقتوں سے قدرت کے فطری نظام اور عالم انسانی پر غالب آسکے۔ فلم میٹرکس کےہیرو کینوریوز کو اسرائیلی وزیر اعظم نتن یاہو کے دورے سعودی عرب سے قبل سے دیکھا جارہا ہےاورایک اطلاع کیمطابق وہ نتن یاہو کے سعودی وفد میں بھی شامل رہا کیونکہ وہ سعودی عرب میں ایک بین الاقوامی تجارتی مرکزی شہر نیو ایم بنانے میں سعودی حکمرانوں کا ہراول دستہ ہیں۔

ایک تحقیقی کتاب بریکنگ انڈیا کے تیرہ ویں باب میں اس نیو اور نیوکون کی زبردست تعریف بتائی گئی ھیکہ کس طرح سنہ دو ہزار ایک سے امریکی نیوکون ہندوستان کو کس طرح اپنی گرفت میں لےکر اپنے ہی خطے میں ذلیل کیا جاتا رہا ہے۔ حتیٰ کہ یہ وقت بھی آن پہنچا کہ انڈیا کے ٹکڑے ٹکڑے کئے جاسکیں۔ یہی عمل سعودی خواب غفلت میں بننے والے نیو ایم شہر میں بھی ہونے جارہا ہے۔صرف کچھ عرصے کی چمک دمک اور پھرانڈیا کیطرح کا حشر تیار کھڑا ہے لیکن پاک چین نئی حکمت عملی نہ صرف سعودی بلکہ انڈین اسٹیبلشمنٹ کیلئے بھی تریاق زہر ہے اور یہ بڑی مشکل اور دیر سے امریکی نیو نامی آفت سے بچ سکیں گے۔

معزز قارئین حالات آپکے سامنے کھلی کتاب کی طرح پیش کیئے جاچکے ہیں جو قومیں میں ڈوبی رہتی ہیں اور معمولی معمولی باتوں کو اشو بناکر شوشل میڈیا میں خرافات پھیلاکر ذمہداری محسوس کرتی ھیں وہ کبھی بھی سنبھل نہیں پاتی اور دشمن خاموشی انہیں اپنا آلہ کار بناکر استعمال کرلیتا ھے یاد رکھیئے یہ آئی ٹی یعنی جدید سائنسی دور ھے اب قوم کے ہر شہری کو چاق و چوبند رہتے ہوئے شوشل میڈیا سمیت دیگر ذرائع کو پہلے سمجھنا پرکھنا دیکھنا مشاہدہ اور تحقیق کے بعد نتائج کو تسلیم کرنا چاہئے اب جنگیں ہتھیار سے نہیں بلکہ دماغ سے لڑی جارہی ہیں جو بیوقوف رہیں گے انکا مقدر پستی اور شکست رہیگا اور جو حاضر دماغ رہیں رہیں گے وہی دشمن کے وار کو سمجھ کر بہترین تدبیر سے شکست دے سکیں گے۔ ایک بات دل و دماغ میں بٹھالیں پاکستانی قوم حالت جنگ میں ھے۔ اب جنگ کا طریقہ کار تبدیل ھوچکا ھے۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں